Apr 15, 2014

ذکر اللہ،طریقہ ذکر اور مجاہدے کا مقصد zikr u llha trea zikar hor mujady ka hassil

0 comments
صوفیاء عظام ؒ کے ہاں جو طریق ذکر رائج ہیں،ان میں حبس دم اور پاس انفاس سب سے زیادہ مقبول ہیں،سلسلہ نقشبندیہ اویسہ میں پاس انفاس طریقہ سے ذکر کیا جاتا ہے۔
اب سوال تو یہ ہے کہ اللہ کا نام لینا ہے تو آرام سے بیٹھ کر لیا جا سکتا ہے ،ان طریقوں کیا ضرورت ہے؟یہ وہ سوال ہے جو اکثر احباب کے ذہن میں بھی آتا ہے،
یہ تو خیر ان لوگوں کی بات جن کا تصوف سے واسطہ نہیں ،مگر سالکین الی اللہ کی رہنمائی کے لئے بھی ضروری ہے کہ وہ طریقہ ذکر کو اچھی طرح سمجھے ،کیونکہ طریقہ درست ہوگا تو مقصد جلدی حاصل ہوگا
زیر نظر پمفلٹ میں میں ان دونوں باتوں کا جواب بہت اچھے انداز میں دیا گیا ہے۔

0 comments:

آپ بھی اپنا تبصرہ تحریر کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

علمی وفکری اختلاف آپ کا حق ہے۔

اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔